پی پی ایل کی قوتِ سماعت سے محروم افراد کے لیے سینٹر برائے ایکسیلنس کی تعمیر کے لئے اعانت

کراچی، 18 مئی، 2016: پاکستان پٹرولیئم لمیٹڈ (پی پی ایل) نے کورنگی انڈسٹریل ایریا، کراچی میں پاکستان ایسوسی ایشن آف دی ڈیف (پی اے ڈی) کی جانب سے قائم کئے جا رہے سینٹر برائے ایکسیلنس فار ڈیف (سی ای ڈی) کی تعمیر کے حوالے سے 3.24 ملین روپے کا عطیہ دیا۔ پی پی ایل کے ایم ڈی و سی ای او سید وامق بخاری نے کمپنی کے صدر دفتر میں دونوں اداروں کے سینئر عملے کی موجودگی میں پی اے ڈی کے شریک صدر عرفان ممتاز کو چیک پیش کیا۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وامق بخاری نے پسماندہ طبقے کے معیارِ زندگی کو بہتر بنانے کی غرض سے طویل مدت کے اقدامات کے لئے پی پی ایل کے عزم کا اعادہ کیا۔ وامق بخاری نے کہا "ایک اہم قومی کمپنی ہونے کی حیثیت سے یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ ہم اپنے کاروباری امور کے ساتھ ساتھ سماجی خدمت سے بھی قوم کی تعمیر میں حصہ لیں"۔

اپنے سماجی بھلائی کے پروگراموں کے لیے مختص شدہ سالانہ بجٹ جو قبل از ٹیکس منافع کا 1.5 فیصد ہوتا ہے، جبکہ موجودہ مالی سال میں حقیقی اخراجات 5 فیصد تک جا پہنچے ہیں، پی پی ایل کو پاکستان سینٹر برائے فلینتھراپی نے مسلسل 11 سالوں سے کارپوریٹ شعبے میں سب سے زیادہ عطیات دینے والے ادارے کی حیثیت سے تسلیم کیا گیا۔

پی اے ڈی عالمی فیڈریشن برائے ڈیف کا ممبر ہونے کے ساتھ ساتھ ملک کا ایک اہم غیر نفع بخش ادارہ ہے جسے 1987 میں سماعت سے محروم افراد کو تعلیم اور ووکیشنل تربیت کے لیے قائم کیا گیا تھا۔ اس وقت، پی اے ڈی ملک بھر میں پھیلے اپنے نیٹ ورک کے ذریعے 2100 سے زائد ممبران کو خدمات فراہم کرتا ہے۔ پرائمری کے نصاب کی اشاروں کی زبان میں تیاری کرنے والے سب سے پہلے ادارے کی حیثیت سے پی اے ڈی نے تحقیق و ترقی کے ذریعے قومی سطح پر اشاروں کی زبان کی ترویج میں کلیدی کردار ادا کیا ہے ساتھ ہی مختلف مضامین پر 19 کتابیں بھی شائع کی ہیں۔

سی ای ڈی قوتِ سماعت سے محروم افراد کو تعلیم فراہم کرنے کے لئے ایسے تدریسی عملے کی مدد حاصل کرے گا اور اس کے لئے مطلوبہ ڈھانچے اور جدید ٹیکنالوجی کی فراہمی سے سیکھنے کے لئے بہترین ماحول و طریقہ کار کی فراہمی کو ممکن بنائے گا

تصویر کا خلاصہ: (بائیں سے پہلے) ایم ڈی و سی ای او پی پی ایل سید وامق بخاری پاکستان ایسوسی ایشن برائے ڈیف کے شریک صدر عرفان ممتاز (بائیں سے چھٹے) کو عطیے کا چیک دیتے ہوئے۔ دونوں اداروں کا سینئر عملہ بھی اس موقع پر موجود ہے۔