پی پی ایل نے اپنے عہد کی پاسداری کرتے ہوئے کندھکوٹ سے یومیہ 230 ایم ایم ایس سی ایف گیس کی فروخت کا ہدف حاصل کرلیا

کراچی 1جون 2017 :گیس کی پیداوار کو بڑھانے کی خاطرحکومتِ پاکستان سے کئے گئے اپنے عہد کی پاسداری کرتے ہوئے پاکستان پٹرولیئم لمیٹڈ (پی پی ایل) نے کندھکوٹ گیس فیلڈ سے یومیہ فروخت ہونے والی گیس کی مقدار کو 230 ایم ایم ایس سی ایف کے ہدف پر مقررہ وقت سے پہلے لاکر اہم کامیابی حاصل کرلی ہے۔ ساتھ ہی کمپنی، ضرورت کے مطابق، اس ہدف کو یومیہ 250 ایم ایم ایس سی ایف تک لے جاسکتی ہے۔قبل ازیں، فیلڈ سے یومیہ180ایم ایم ایس سی ایف گیس گڈو تھرمل پاور اسٹیشن کو دی جاتی رہی ہے۔

کندھکوٹ گیس فیلڈ کی مکمل صلاحیت سے استفادہ حاصل کرنےکے لئے پی پی ایل مسلسل کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے جس میں پچھلے نو ماہ میں،جب حکومتِ پاکستان سے عہد کیا گیا تھا، خاصی تیزی آئی ہے۔ ان اقدامات میں پیداواری کنوؤں کی تیز ترکھدائی،کمپریسرکی تجدید اورپیداواری پلانٹس سے دشواریوں کو دور کرناشامل ہیں۔

اس حوالے سے سالِ رواں کے دوران فیلڈ میں، سات پیداواری کنوؤں کی کھدائی کی منصوبہ بندی کی گئی ہے۔جن میں سے تین کنوؤں پر کام مکمل ہوچکاہے جس کے ذریعے یومیہ 50 ایم ایم ایس سی ایف اضافی گیس قومی سپلائی میں شامل ہوگئی ہے۔ساتھ ہی فیلڈ پر بیک وقت تین رگ آپریشنز جاری ہیں

پی پی ایل نے حال ہی میں اپنی پیداوار کو بڑھانے کی خاطر موجودہ فیلڈز بشمول سوئی، کندھکوٹ اور آدھی، سے استعمال ہونےوالےذخائر کی ممکنہ حد تک تجدیداور پیداواری سرگرمیوں کو بڑھاتے ہوئے نومبر 2016 میں ایک اہم سنگ میل عبور کیا جب اس کی خالص یومیہ پیداوار 1بی سی ایف ای سے تجاوز کر گئی۔