پی پی ایل کی بحریہ یونیورسٹی اور آئی بی اے کی مالی اعانت

کراچی ، 4 اکتوبر2016 : پاکستان پیٹرولئیم لمیٹڈ (پی پی ایل ) نے نوجوان ٹیلنٹ کی پرورش اور اسے فروغ دینے کے مسلسل عزم کے تحت بحریہ یونیورسٹی، کراچی کیمپس (بی یو کےسی) اور انسٹیٹیوٹ برائے بزنس ایڈ منسٹریشن(آئی بی اے) کے لئے اپنے تعاون کیا ہے۔ ایم ڈی و سی ای و سید وامق بخار ی نے بی یو کے سی میں پی پی ایل جیو فزکس چیئر کے لئے عہد شدہ کل37.5 ملین روپے میں سے 7.58 ملین روپے کی آخری قسط ارضی و ماحولیاتی سائنس کے شعبے اور پی پی ایل چیئر کے سربراہ ڈاکٹر مبارک علی کے حوالے کی۔وامق بخاری نے آئی بی اے کے نیشنل ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام (این ٹی ایچ پی)کے سلسلے میں 2 ملین روپے کی مالیت کا چیک 4 اکتوبر کو ہیڈ آفس میں ادارو ں کے نمائندگان اور عہدے داران کی موجودگی میں آئی بی اے اے ٹی ایچ پی کے سینئیر ایگزیکٹو سید رضوان علی بخاری کے حوالے کیا۔

اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے وامق بخاری نے کہا کہ"تیل و گیس کے شعبے کی ایک سر فہرست کمپنی ہونے کی حیثیت سے پی پی ایل باصلاحیت انسانی وسائل کی ایک بڑی تعداد کو جو جدیدٹیکنا لوجی کے استعمال سے واقفیت بھی رکھتی ہو، کو تیل و گیس کی مقامی صنعت میں خدمات فراہم کرنے کے لئے انہیں تیار کرنے کے سلسلے میں تعلیمی اداروں سے اپنے روابط کو مزید مضبوط کرنے کے لئے کوشاں ہے۔"

پاکستان سینٹر برائے فیلنتھراپی کی جانب سے پی پی ایل کو مسلسل گیارہویں سال سب سے زیادہ فلاحی امداد دینے والے ادارے کے طور پر تسلیم کیا گیا ہے۔ جیو فزکس میں تحقیق و ترقی کو فروغ دینے کے لئے جوکہ انڈر گریجویٹ اور پوسٹ گریجویٹ ڈگری سے ہم آہنگ ہو ، کمپنی نے2012 میں بحریہ یونیورسٹی ، کراچی کیمپس کے ارضی و ماحولیاتی سائنسز کے شعبے میں پی پی ایل کی جیو فزکس چیئرقائم کی۔اب تک پی پی ایل نے اس مد میں کل 52.5 ملین روپے کا عطیہ دیا ہے جس میں 15 ملین روپے کی ایک خصوصی گرانٹ بھی شامل ہے جس کے تحت دیگر سرگرمیوں کے علاوہ جدید سہولیات سے آراستہ جیو فزکس ڈیٹا لیب بھی قائم کی گئی۔ اس کے علاوہ حال ہی میں ، این ای ڈی یونیورسٹی برائے انجینئرنگ و ٹیکنالوجی ، کراچی میں پی پی ایل کی پیٹرولئیم انجینئرنگ چیئر کا آغازکیا گیا جبکہ دو مزید چیئرجن میں سے ایک سندھ یونیورسٹی جامشورو میں جیو فزکس کے لئے اور دوسری مہران یونیورسٹی برائے انجینئرنگ و ٹیکنالوجی ، جامشورو میں پیٹرولئیم انجینئرنگ کے لئے تیاری کے مراحل میں ہے۔

آئی بی اے کے نیشنل ٹیلنٹ ہنٹ پروگرام کے تحت کمپنی نے 2012 سے اپنے مختص کردہ 12 ملین روپے کے مجموعی بجٹ سے 6 طالبعلموں کو جن میں سے دو بلوچستان اور چار خیبر پختونخواہ سے تعلق رکھتے ہیں ، وظائف دے رہی ہے۔جن میں سے دو طلبا فارغ التحصیل بھی ہو چکے ہیں۔