شاہد خاقان عباسی نے پی پی ایل کے سوئی کمپریسرز ریویمپنگ پروجیکٹ کا افتتاح کردیا

سوئی ،24 اکتوبر2016 : وفاقی وزیر برائے پیٹرولئیم و قدرتی وسائل شاہد خاقان عباسی نے 24 اکتوبر کو پاکستان پیٹرولئیم لمیٹڈ (پی پی ایل ) کی شناخت سوئی گیس فیلڈمیں کمپریسرز ریویمپنگ پروجیکٹ کا افتتاح کیا۔ تقریب میں صوبائی اور مقامی حکومتوں کے اراکین، علاقائی عمائدین اور میڈیا کے ساتھ ساتھ پی پی ایل کی انتظامیہ اور عملے نے بھی شرکت کی۔

ایس ایم ایل کمپریسرز ریویمپنگ پروجیکٹ پی پی ایل کی تسلسل کے ساتھ پیداوار میں اضافے اور متبادل ذخائر کی دریافت سے توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے کے حوالے سے کوششوں کا ایک حصہ ہے۔ کمپریسرز کی از سرِ نوبحالی اور بہتری کا یہ منصوبہ مقررہ وقت سے پہلے اور لاگت کے اعتبار سے3 بلین روپے میں مکمل ہوا جوکہ مختص کئے گئے 4 بلین روپے کے مقابلے میں 1 بلین روپے کی بچت ہے۔ اس منصوبے کی تکمیل سے گیس کی پیداوارمیں یومیہ 25 سے30 ایم ایم ایس سی ایف اضافہ ہوگا جوکہ 217 بی سی ایف اضافی ذخائر سے پیداوار کے حصول کو ممکن بنائے گا۔

اس کے نتیجے میں اور دیگر اقدامات سے، سوئی گیس فیلڈ سے پیداوار میں ہونے والی تاریخی 6 فیصد سالانہ کمی کو نہ صرف محدو دکیا گیا بلکہ اس عمل کو بدلتے ہوئے پیداوار میں اضافہ کا گیا جو گزشتہ سال سے تقریباً 5 فیصد زیادہ ہے ۔

اپنے استقبالی خطاب میں، ایم ڈی و سی ای او سید وامق بخاری نے پی پی ایل کی حالیہ کامیابیوں کے ساتھ ساتھ کمپنی کی اثاثہ جاتی ہائیبرڈ طرز پر تبدیلی اور عملے کی کاوشوں سے کامیابیوں کے ریکارڈ ٹوٹنے کے تسلسل کا ذکر کیا۔ انہوں نے سوئی میں کاروباری سماجی ذمہ داری پروگرام کے تحت کمپنی کے اقدامات اوروہاں پیداواری انحطاط کو محدود کرتے ہوئے اسے بہتری کی طرف ما ئل کرنے کے بارے میں روشنی ڈالی۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے پیداوار میں اضافے کے لئے پی پی ایل کی کوششوں، خاص طور پرسوئی میں کمپریسرز ریویمپنگ پروجیکٹ پرمبارکباد دی۔ انہوں نے طلب و رسد کے درمیان فرق کو کم کرنے کے لئے پیداوار میں اضافے کے سلسلے میں تیل و گیس کی کمپنیوں کو اپنی کوششیں تیزتر کرنے پر زور دیا تاکہ درآمدات پر انحصار کم کرتے ہوئے زر مبادلہ کی بچت بھی کی جا سکے۔ حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیرداخلہ میرسرفراز احمد بگٹی نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

اکتوبر1987 میں باقائدہ طور پر افتتاح کئے جانے اورشروع ہونے والا یہ پاکستان کا سب سے بڑ ا کمپریسراسٹیشن ہے۔ سوئی کمپریسرز کو پیداوار میں اضافے کے لئے رفتہ رفتہ بہتر بنایا گیا ہے۔