جائزہ

پاکستان پٹرولئیم لمیٹڈ (پی پی ایل) سوئی، کندھ کوٹ، آدہی، مزرانی، چاچڑ، آدم، آدم ویسٹ اور شاھدادنامی آٹھ پیداواری فیلڈز کو آپریٹ کرتی ہے – جن میں سے پہلی دو مکمل طور پر پی پی ایل کی ملکیت ہیں – ساتھ ہی 15پیداواری فیلڈزمیں بھی شراکت رکھتی ہے۔

پی پی ایل کی آپریٹڈ اور پارٹنر آپریٹڈ فیلڈز سے گیس کی روزانہ پیداوار تقریباً ایک ملین مکعب فیٹ (بی سی ایف) ہے، جو ملک کی کل گیس کی پیداوار کا 20 فیصد سے زائد حصہ ہے۔کمپنی کے اہم صارفین سوئی سدرن گیس کمپنی لمیٹڈ(ایس ایس جی سی ایل)، سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ (ایس ا ین جی پی ایل) اور پانی و بجلی کی پیداوار کا ادارہ (واپڈا) ہیں۔

30 جون 2015 کو پی پی ایل کےثابت شدہ اور قابل ِ حصول ذحائر 2.021 ٹریلین مکعب فیٹ (ٹی سی ایف) قدرتی گیس، 17.041 ملین بیرل(ایم ایم بی بی ایل) تیل/این جی ایل اور309,918 ٹن ایل پی جی ہیں۔