پی پی ایل نے ٹائیٹ گیس کے 1.3 کلومیٹر طویل افقی کنویں کی کھدائی مکمل کر لی

کراچی, 20جولائی2017:پاکستان پیٹرولئیم لمیٹڈ (پی پی ایل ) نے حال ہی میں ٹائیٹ گیس کےافقی کنویں نوشہرو فیروز(این ایف)Hor-1 کھدائی مکمل کرلی۔

چلتن فارمیشن میں 4940 میٹرز کی کل گہرائی اور1.3 کلومیٹرز افقی سیکشن کا حامل،این ایف Hor-1پاکستان میں ٹائیٹ گیس ذخائر میں کھودے جانے والے سب سے گہرے اور طویل ترین افقی کنوؤں میں سے ایک ہے۔ یہ10 مرحلوں میں ملٹی ۔فریک کے ذریعے مکمل ہونے والاملک کا پہلا کنواں ہے۔

پی پی ایل نے 2014 میں کنوئیں این ایف X-1ارضی سے ٹائیٹ گیس دریافت کی تھی جس کے بعد زیادہ سے زیادہ افقی کنویں ڈیزائن کرنے کے لئے سرگرمی کے ساتھ کمپنی میں ارضی اور طبیعاتی تحقیق کا کام کیا گیا۔ افقی سیکشن میں کامیاب کھدائی کے لئے اصلی وقت کے تجزیئے کے ساتھ ساتھ دورانِ کھدائی لوگنگ ٹیکنالوجی کا استعمال کیا گیا ۔

ابتدائی نتائج کی بنیاد پر ، صر ف ایک زون سے32/64 انچ چوک سائز پریومیہ1.3 ایم ایم ایس سی ایف گیس اور 9 بلین بیرل کنڈنسیٹ حاصل ہوئے ۔ کنوئیں کی صلاحیت میں نمایاں اضافے کےلئے پی پی ایل نے10 مراحل پر مشتمل ملٹی فریک جاب کی منصوبہ بندی کی ہے۔

این ایف Hor-1دریافتی بلاک نوشہرو فیروز، سند ھ میں ہے جس میں پی پی ایل90 فیصد کاروباری شراکت کے ساتھ آپریٹر ہے اور ایشیا ریسورسز آئل لمیٹڈ بقیہ 10 فیصد کاروباریساجھے داری کی حامل ہے۔